We count on India for its contribution to multilateralism as a force for good: U.N. Dep Sec-General

We count on India for its contribution to multilateralism as a force for good: U.N. Dep Sec-General

اقوام متحدہ کے ایک اعلی عہدیدار نے کہا ہے کہ بین الاقوامی برادری اس سال پہلے سے کہیں زیادہ ہندوستان پر منحصر ہے ، کیونکہ اس نے کثیرالجہتی کے لئے ایک اُبھرتی ہوئی قوت کے طور پر شراکت کی ہے – چاہے وہ کوویڈ 19 کی ویکسین ہو یا آب و ہوا کی کاروائیاں يا پھر امن کی حفاظت ۔ اقوام متحدہ کی ڈپٹی سکریٹری جنرل آمنہ محمد نے 10 فروری کو ورلڈ پائیدار ترقیاتی سربراہ اجلاس 2021 کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ہندوستان کی جانب سے قابل تجدید توانائی کے اہداف کو تقویت بخش بنانے اور اپنے آب و ہوا کے عملی اہداف کو حاصل کرنے کی کوششوں کی تعریف کی۔
محترمہ محمد نے کہا کہ اس وقت ہندوستان واحد جی 20 ملک ہے جو اپنی قومی سطح پرعزم شراکتوں کے مقاصد کو بڑھاوا دے رہا ہے اور ان مقاصد میں بہت کچھ پہلے ہی ہوچکا ہے ۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہندوستان کی کوششیں دوسرے ملکوں کے لئے بھی ایک “راستہ” مہیا کرتی ہیں ، خاص طور پر بین الاقوامی تعاون کے ذریعہ جس کی اقوام متحدہ نمائندگی کرتا ہے۔
محترمہ محمد نے اتوار کے روز شمالی ریاست اتراکھنڈ میں گلیشیر پھٹنے اور طوفانی بارش کے نتیجے میں ہونے والے جانی و مالی نقصان پر لوگوں اور حکومت ہند سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے اپنے خطاب کا آغاز کیا۔
وزیر اعظم نریندر مودی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ورلڈ پائیدار ترقیاتی سمٹ 2021 کا افتتاح کیا تھا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: