Will Turkey become a nuclear weapon power with Pak’s covert support?

Will Turkey become a nuclear weapon power with Pak’s covert support?

پاکستان اور ترکی کے مابین ظاہر اور مخفی تعلقات کیسی سے چھپا نہیں ہے، گزشتہ ہفتے دونوں ملکوں کے اعلیٰ فوجی قیادت کِ ایک اجلاس میں فوجی سازوسامان کِ تبادلے کے متعلق بات چیت ہوا، جسمے انمنیڈ ایریل وہیکل UAV، میزائل تکنیک کے تبادلے پر ذکر ہوا اور ذرائع کے حوالے سے خبر ہے کہ تُرکی کو ایٹمی ہتھیار فراہم کرنے کی بھی بات چیت ہوا،
چُکی تُرکی کِ صدر رجب طیب اردوغان اسلامی دینا کِ صدارت کرنا چاہتے ہیں اور اسکے ساتھ ایٹمی ہتھیاروں سے لیس ایک کوی طاقت کے طور پر دُنیا میں قابض ہونا چاہتے ہیں،
اسمِ اُنکا ساتھ نظریات ساتھی پاکستان دے رہا ہے جو سعودی عربیہ سے متاثر آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن OIC سے ہٹ کر ایک گروہ قایم کرنا چاہتا ہے تاکہ انکے مسلو اور مدو کو انکے مطابق چلایا جا سکے، لیکن اسمِ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کِ بڑھا روڑھا بنے ہوئے ہیں،
دونوں ملکوں کی ان پوشیدہ حرکات دُنیا کِ لیے کافی مشقت پیدا کر سکتا ہے، اسمِ چین کا خاموشی بھاری حامی بھی کافی اہم کردار ادا کر رہا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: