UNICEF: over 10000 children killed in conflicts in Yemen

اقوام متحدہ کے بچوں کے فنڈ (یونیسیف) کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ کے مطابق مارچ 2015 سے یمن میں 10 ہزار سے زائد بچے تنازعات میں ہلاک یا معذور ہو چکے ہیں۔ یونیسف نے جنیوا سے جاری رپورٹ میں صورتحال کو ایک شرمناک سنگ میل قرار دیا۔ یونیسیف نے کہا کہ لڑائی کے آغاز سے روزانہ اوسطا 4 4 بچے مارے جاتے ہیں جبکہ ہلاک اور معذور بچوں کی تعداد 10 ہزار سے زائد بتائی جاتی ہے۔ یونیسف کے ترجمان جیمز ایلڈر نے کہا کہ تازہ ترین فہرست میں اقوام متحدہ کی طرف سے تصدیق شدہ کیسز شامل ہیں جبکہ اموات اور زخمیوں کے کیسز ریکارڈ نہیں ہیں۔ لڑائی کے علاوہ بڑی تعداد میں اموات بالواسطہ وجوہات کی وجہ سے بھی ہوتی ہیں جنہیں روکا جا سکتا ہے۔ ہیضہ اور خسرہ کے علاوہ بچے بھوک اور غذائیت کے خطرات سے دوچار ہیں۔ یمن بچوں کے لیے مشکل ترین ممالک میں سے ایک ہے جہاں ہر 10 منٹ میں ایک بچہ مر جاتا ہے جس کا علاج ممکن تھا۔ بدقسمتی سے صورتحال مزید خراب ہوتی جا رہی ہے کیونکہ ان جانی نقصانات سے بچنے کے لیے کوئی انتظامات نہیں کیے گئے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.