India and China hold 11th round of military talks; focus on further disengagement in eastern Ladakh

ترقی سے واقف افراد نے بتایا کہ مشرقی لداخ میں ہاٹ اسپرنگس ، گوگرا اور دیپسانگ جیسے بقیہ مقامات پر عدم استحکام کے عمل کو آگے بڑھانے کے لئے ہندوستان اور چین نے جمعہ کے روز فوجی مذاکرات کا ایک اور دور منعقد کیا۔
انہوں نے بتایا کہ کور کمانڈر سطح کے مذاکرات کا 11 واں دور صبح ساڑھے دس بجے مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی) کے ہندوستان کی جانب واقع چوشول بارڈر پوائنٹ پر شروع ہوا۔
فوجی مکالمے کا 10 واں دور 20 فروری کو ہوا ، دو دنوں کے بعد جب دونوں فوجوں نے پینگونگ جھیل کے شمالی اور جنوبی کنارے سے فوجیوں اور اسلحہ کی واپسی کے اختتام کا فیصلہ کیا ۔ یہ بات چیت تقریبا 16 گھنٹے جاری رہی۔
جمعہ کو ہونے والے مذاکرات میں ہندوستانی وفد کی قیادت لہہ میں قائم 14 کور کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل پی جی کے مینن کررہے ہیں۔
مذکورہ بالا افراد میں سے ایک نے کہا کہ ہندوستان ان بات چیت میں باقی رگڑ مقامات پر منحرفیت عمل جلد سے جلد مکمل کرنے پر زور دے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: