Pakistan torturing Hindus and other minorities

ویڈیوز

عارف کی بھاشا کے تازہ ترین ایپی سوڈ میں میزبان عارف آجکیہ پاکستان کی اقلیتوں اور پاکستان میں ہندوؤں کی حالت کے بارے میں گفتگو کر رہے ہیں۔ دنیا کی سب سے مظلوم اقلیتیں وہ ہیں جو پاکستان میں مقیم ہیں، کیونکہ ان کے حالات زندگی انسانیت کے درجے سے نیچے ہیں۔ ان کی زندگی کے ہر مرحلے میں، وہ امتیازی سلوک حاصل کرتے ہیں، بے حد۔ یہ امتیازی سلوک اقلیت کی زندگی میں بہت کم عمری سے شروع ہوتا ہے، اس کے اسکول کے پہلے دن سے ہی اس پر اس حد تک غنڈہ گردی کی جاتی ہے کہ ان کے لیے پینے کے گلاس بھی اقلیتی اور اکثریتی بچوں کے لیے الگ سے رکھے جاتے ہیں۔ یہ پاکستان کی اقلیتوں کا حال ہے اور پھر بھی ان میں اقلیتوں کے ساتھ ہونے والے سلوک پر بھارت کی طرف انگلی اٹھانے کی ہمت ہے، حالانکہ بھارت ایک ایسا ملک ہے جہاں اقلیتوں کو ترجیح دی جاتی ہے اور وہ پروان چڑھی زندگی گزارتے ہیں۔

پاکستان میں صفائی کا کام کرنے والے لوگ زیادہ تر ہندو ہیں کیونکہ وہ اس کام کے لیے اپنے لوگوں کو نہیں رکھتے ہیں جو کہ بلند و بالا اور واضح طور پر ملک میں رہنے والے ہندوؤں کو صرف ایک پیغام دیتا ہے کہ وہ برابر نہیں ہیں، وہ باہر کے لوگ ہیں۔ پاکستان میں ایک اقلیت کو سب سے بری چیز جس سے گزرنا پڑتا ہے وہ جبری تبدیلی مذہب ہے جو لڑکی کو زبردستی اغوا کرنے، اجتماعی عصمت دری اور اس کے ریپ کرنے والے سے شادی کرنے کے بعد ہوتا ہے۔ جبری تبدیلی اور جبری تبدیلی دو بڑی چیزیں ہیں جن سے اقلیتوں کو گزرنا پڑتا ہے۔ یہاں تک کہ اقلیتوں کی عبادت گاہوں کو ان کے تہواروں کے دوران تباہ کر دیا جاتا ہے۔ ’پاکستان میں اقلیتوں کے ساتھ سلوک‘ کے بارے میں مزید جاننے کے لیے عارف کی بھاشا کا تازہ ترین ایپی سوڈ صرف ہمارا ہند پر دیکھیں۔