کشمیر کی خواتین نے دقیانوسی تصورات کو توڑ ا ،

کشمیر فیشن شو میں پورے اعتماد کے ساتھ شریک ہوئ

سرینگر میں 30 مارچ 2021 کو ایس کے آئی سی سی سی میں جموں کشمیر ورکرز پارٹی کے صدر میر جنید کی سربراہی میں
کشمیر فیشن شو ، فیشن مقابلے کا اہتمام کیا گیا۔ فیشن شو میں وادی کے کونے کونے سے بڑی تعداد میں شرکت ہوئی جس میں
سے 25 فائنلسٹ کو مقابلے کے فائنل کے لئے منتخب کیا گیا۔ یہ شو ا پنی نوعیت کا پہلا شو تھا جہاں خواتین نے بے خوف ہوکر
اپنی ماڈلنگ کی مہارت کا ایک بہت بڑے چیئر اور تالیاں بجانے والے سامیٔین کے سامنے اظہار کیا۔ فیشن شو کی فاتح لداخ سے
تعلق رکھنے والی شیناز تھیں۔

اس فیشن شو کے مہمان خصوصی ڈویژنل کمشنر کشمیر شری پانڈورنگ کے پولے تھے جنہوں نے منتظمین کی کاوشوں کو
سراہا اور اس طرح کے مزید اوینٹس کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے منتظمین اور شرکاء کو ہر طرح کے تعاون کی یقین
دہانی کرائی اور کہا کہ ریاست کشمیر میں ماڈلنگ کرنے والی سرگرمیوں کو مزید فروغ دینے کے لئے ریاستی انتظامیہ ہر
سہولت مہیا کرسکتی ہے۔

اس تقریب کو حقیقت بنانے والے شخص میر جنید جو کہ اس تقریب کے مہمان خصوصی بھی تھے ،نے اس موقع پر گفتگو
کرتے ہوئے شرکاء اور منتظمین کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ایسا حیرت انگیز شو پیش کیا۔ انہوں نے اپنے خطاب میں خواتین
شرکا کو مقابلے کا حصہ بننے پر خصوصی طور پر مبارکباد پیش کی اور ان سے کہا کہ وہ کشمیر کے قدیم اور قدامت پسند
معاشرے میں ماڈلنگ اور فیشن کے تصور کو مرکزی دھارے میں لانے کے لئے میدان میں کام کرتے رہیں ۔

اس پروگرام میں ثقافتی اہمیت کے حامل پروگراموں کا اہتمام کرنے کا انداز بہت اچھی طرح سے دکھایا گیا ۔ اس پروگرام میں
کشمیری ماڈلز کی صلاحیتوں کو ظاہر کیا گیا اور اس کے ساتھ ساتھ اس طرح کی مشہور ثقافتی تقریبات کے انعقاد کے لئے
کشمیری نوجوانوں کی تنظیمی صلاحیتوں کا بھی مظاہرہ کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: