چین کے اعلی عہدے دار کا کہنا ہے کہ چینی کوڈ ویکسین کی افادیت کم ہے

چینی کورونا وائرس ویکسینوں کی کمزوری کے ایک نادر اعتراف میں ، ملک کے اعلی بیماریوں پر قابو پانے والے عہدے دار کا کہنا ہے کہ چینی وایکسینوں کی تاثیر کم ہے اور حکومت اس میں اضافہ کرنے کے لئے ان میں اختلاط کرنے پر غور کررہی ہے۔

چین کے بیماریوں پر قابو پانے والے چین سنٹر کے ڈائریکٹر ، گاو فو نے ، جنوب مغربی شہر چینگدو میں منعقدہ ایک کانفرنس میں کہا کہ چینی ویکسینوں کے تحفظ کی شرح بہت زیادہ نہیں ہے۔

بیجنگ نے ان ویکسین کی لاکھوں خوراکیں بیرون ملک تقسیم کی ہیں جبکہ اُسنے فائزر بائیو ٹیک کی تاثیر کے بارے میں بھی شبہات کو فروغ دینے کی کوشش کی ہے۔

اتوار کو ایک نیوز کانفرنس میں عہدیداروں نے گاو کے تبصرے یا سرکاری منصوبوں میں ممکنہ تبدیلیوں سے متعلق سوالات کا براہ راست جواب نہیں دیا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ملاوٹ والی ویکسین یا ترتیب وار حفاظتی ٹیکوں سے تاثیر میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ برطانیہ میں محققین فائزر بائیو ٹیک اور روایتی آسٹر زینیکا ویکسین کے ممکنہ امتزاج کا مطالعہ کر رہے ہیں۔

Photo Credit : https://www.arabnews.com/sites/default/files/styles/n_670_395/public/2020/12/31/2406616-1791507714.jpg?itok=-ti3O8iH

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: