ٹرمپ پر تنقید، ری پبلکنز نے لز چینی کو کانگریس میں پارٹی قیادت سے ہٹا دیا


امریکی ایوانِ نمائندگان میں ری پبلکن اراکین نے ہاؤس کی رکن راہنما لز چینی کو پارٹی کی قیادت کے عہدے سے ہٹا دیا ہے۔ یہ اقدام لز چینی کی سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے نومبر کے صدارتی انتخابات میں دھاندلی کے الزامات پر تنقید کی وجہ سے لیا گیا ہے۔

ری پبلکن کاکس نے بدھ کے روز رائے شماری کے ذریعے سابق نائب صدر ڈک چینی کی صاحبزادی کو ہاؤس ری پبلکن کانفرنس کی سربراہ کی پوزیشن سے ہٹا دیا۔ یہ منصب ایوان نمائندگان میں ری پبلکن لیڈرشپ کی تیسری بڑی پوزیشن ہے جس میں پارٹی کے پیغام کو عوام تک پہنچانا اہم ذمہ داری ہوتی ہے۔

لز چینی مغربی ریاست وائمنگ سے واحد نمائندہ تھیں جو تواتر کے ساتھ سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اس دعوے کو مسترد کرتی آ رہی تھیں کہ نومبر کے انتخابات کے قانونی فاتح وہ خود ہیں نہ کہ جو بائیڈن، باوجودیکہ ٹرمپ کی مہم نے اہم ریاستوں میں حتمی نتائج سے متعلق جو مقدمے دائر کئے عدالتوں میں ان پیٹیشنز کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

لز چینی کو پہلی مرتبہ پارٹی کے اندر اس وقت تنقید کا سامنا کرنا پڑا جب انہوں نے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کے حق میں ووٹ دیا۔ ٹرمپ پر الزام تھا کہ انہوں نے چھ جنوری کو کانگریس کی عمارت پر اپنے سینکڑوں حامیوں کو حملے کے لیے اکسایا جس کا مقصد اراکین کانگریس کو جو بائیڈن کی فتح کی توثیق سے روکنا تھا۔

منگل کی رات ہاؤس کے فلور پر اپنی تقریر میں لز چینی نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے انتخابی نتائج کو غیر قانونی قرار دینے کی جاری کوششیں امریکہ کے لیے ایسا خطرہ ہیں جس کا سامنا پہلے کبھی نہیں ہوا۔

اپنے قدامت پسندانہ ریکارڈ کا دفاع کرتے ہوئے لز چینی نے کہا کہ سب سے بڑا قدامت پسندانہ اصول ہے قانون کا تقدس۔

ان کے الفاظ میں، ’’میں پیچھے خاموش تماشائی کی طرح نہیں بیٹھوں گی جب دیگر افراد ہماری جماعت کو تنزلی کے اس راستے کی جانب لے جائیں جو قانون کو ترک کر دے اور سابق صدر کی جانب سے ہماری جمہوریت کو تہس نہس کرنے میں ان کا ساتھ دے۔‘‘

نیویارک سے ایوان نمائندگان کی رکن ایلس سٹیفنیک جو سابق صدر ٹرمپ کے دعوؤں کی پرجوش انداز میں حمایت کرتی رہیں ہیں، ان کو لز چینی کی جگہ کانگریس میں پارٹی کانفرنس کی سربراہ بنائے جانے کا امکان ہے۔ ہاؤس میں ری پبلکن لیڈر کیون میکارتھی نے فاکس نیوز کے ساتھ ایک حالیہ انٹرویو میں سٹیفینک کے لیے اپنی حمایت کا اعلان کیا تھا۔

Photo Credit : https://denver.cbslocal.com/wp-content/uploads/sites/15909806/2021/05/liz-cheney.jpg

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: