سینیٹر ربانی کا کہنا ہے کہ پاکستان میں وفاقیت ، پارلیمانی جمہوریت بگڑ رہی ہے

سینیٹر میاں رضا ربانی نے کہا کہ پاکستان میں وفاقیت اور پارلیمانی جمہوریت کے تصورات ہر گزرتے دن کے ساتھ ختم ہورہے ہیں۔ ڈان اخبار کی خبر کے مطابق ، ایک قومی کانفرنس میں ان خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ربانی نے کہا کہ یہ انتہائی بدقسمتی کی بات ہے کہ موجودہ وفاقی پارلیمانی جمہوری نظام کو ارد صدارتی نظام کے ساتھ تبدیل کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔

انہوں نے یہ بھی ریمارکس دیئے کہ داخلی اور خارجی حالات ایسے تجربات کے لئے سازگار نہیں ہیں۔

پاکستانی سینیٹر نے مشترکہ مفادات کونسل (سی سی آئی) کے تحت موجودہ قومی کوآرڈینیشن میکانزم کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) جیسے نئے ماورائے آئین فورم بنانے کی بجائے مضبوط بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی نظام کی کلید ہونے کے باوجود سی سی آئی کے اجلاس باقاعدگی سے نہیں بلائے جاتے تھے ، انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی قانون سازی فہرست پارٹ دو میں تمام معاملات کابینہ کے ذریعہ طے کی جارہی ہے ، جو آئین کے منافی ہے ۔

ڈان کے مطابق ، تقریب کا انعقاد برطانیہ حکومت کے فارن ، دولت مشترکہ ترقیاتی دفتر (ایف سی ڈی او) کے تعاون سے ڈیموکریسی رپورٹنگ انٹرنیشنل (ڈی آر آئی) نے کیا تھا۔ کانفرنس میں وفاقی دارالحکومت اور صوبوں سے تعلق رکھنے والے قانون سازوں ، قانونی اور انتظامیہ کے کارکنوں نے شرکت کی۔

Photo Credit : https://upload.wikimedia.org/wikipedia/commons/d/d1/Raza_Rabbani.jpg

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: