سمندری طوفان ریٹا سے وسطی امریکہ میں کم ازکم 57 افراد ہلاک

سمندری طوفان ریٹا سے وسطی امریکہ میں کم ازکم 57 افراد ہلاک

نکاراگوا کے ساحلی علاقوں میں منگل سے آنے والے سمندری طوفان ایٹا سے وسطی امریکہ اور ہندورس کے علاقے نشانہ بنے ہیں اور وہاں شدید بارشوں، سیلابوں اور مٹی کےتودے گرنے کے واقعات میں کم از کم 57 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

ایک سمندری طوفان کے طور پر ریٹا کا زور اور شدت گھٹنا شروع ہو گئی ہے لیکن اس کے ساتھ آنے والی مسلسل بارشوں سے مسائل پیدا ہو رہے ہیں اور پاناما سے لے کر گوٹے مالا تک کے علاقے مزید سیلابوں کی زد میں آ رہے ہیں۔

گوٹے مالا کے صدر الجاندرو گیماٹی نے کہا ہے کہ ان کے ملک میں کم ازکم 300 مکانوں کو بارشوں اور سیلابوں سے نقصان پہنچ چکا ہے جب کہ اگلے دو روز تک بارش جا ری رہنے کا امکان ہے۔

امریکہ نے ہندورس میں سیلابوں میں پھنسے ہوئے لوگوں کی مدد کرنے والی ٹیم کو ایک طبی سہولتوں والا ہیلی کاپٹر فراہم کیا ہے جس سے جمعرات کو متاثرہ علاقوں سے کئی افراد کو نکالا گیا۔

سمندری طوفانوں سے متعلق امریکہ کے قومی مرکز نے کہا ہے کہ ریٹا شمال کی جانب اپنے سفر میں کیوبا اور جنوبی فلوریڈا کی طرف بڑھنے کے دوران بحیرہ کریبئن میں موسمی طوفان کی قوت حاصل کر سکتا ہے۔

ہری کین نیشنل سینٹر نے کیوبا اور بلیز کو طوفان کی نقل و حرکت پر نظر رکھنے کا مشورہ دیا ہے۔

Photo Credit : https://www.wishtv.com/wp-content/uploads/2020/11/CROP-Hurricane-Eta-GettyImages-1229483518-scaled.jpg

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: